Udaas Shaam Ki Tanhaiyon Mein Jalta Howa

اداس شام کی تنہائیوں میں جلتا ہوا

اداس شام کی تنہائیوں میں جلتا ہوا

وہ کاش آئے کبھی میرے پاس چلتا ہوا

شب فراق نے مسمار سارے خواب کیے

کوئی تو مژدہ سنائے یہ دن نکلتا ہوا

ہے کیا عجب کہ کبھی چاند بھی اندھیروں میں

سکوں تلاش کرے زاویے بدلتا ہوا

مرے مسیحا خدا آج تیرا رکھے بھرم

نظر مجھے نہیں آتا یہ جی بہلتا ہوا

میں روشنی کے نگر میں پڑاؤ خاک کروں

ڈرا رہا ہے مجھے اپنا سایہ ڈھلتا ہوا

رفیق خیال

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(390) ووٹ وصول ہوئے

متعلقہ شاعری

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Rafique Khayal, Udaas Shaam Ki Tanhaiyon Mein Jalta Howa in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Sad Urdu Poetry. Also there are 41 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.5 out of 5 stars. Read the Sad poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Rafique Khayal.