Iss Se Behter Mere Tasveer Nahi Ho Sakti

اس سے بہتر مری تصویر نہیں ہو سکتی

اس سے بہتر مری تصویر نہیں ہو سکتی

ذات بے عیب سے تقصیر نہیں ہو سکتی

کچھ تو ہے خاص اسیری میں لطافت ورنہ

سب کو درکار یوں زنجیر نہیں ہو سکتی

مجھ کو دھندلا سا کوئی خواب نظر آیا ہے

اب سحر ہونے میں تاخیر نہیں ہو سکتی

اپنی بینائی سے روشن رکھو آنکھیں اپنی

ہر کسی غار میں تنویر نہیں ہو سکتی

کیسی الجھن ہے کہ جس شے کی طلب ہے مجھ کو

وہ کسی شخص کی جاگیر نہیں ہو سکتی

جب قلم ہاتھ میں آیا تو یہ جانا میں نے

مجھ سے حالت میری تحریر نہیں ہو سکتی

یہ بھروسے کی ہے بنیاد بھی لازم راحتؔ

یوں عمارت کوئی تعمیر نہیں ہو سکتی

راحت حسن

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(429) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Rahat Hasan, Iss Se Behter Mere Tasveer Nahi Ho Sakti in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope Urdu Poetry. Also there are 32 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.8 out of 5 stars. Read the Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Rahat Hasan.