Ju Loog Deda O Dil Ko Tabah Dekhte Hain

جو لوگ دیدہ و دل کو تباہ دیکھتے ہیں

جو لوگ دیدہ و دل کو تباہ دیکھتے ہیں

مکین خواب کے آنے کی راہ دیکھتے ہیں

ہمیں اب آنکھ کے منظر کا اعتبار نہیں

سو ہم اب عکس نہیں بس نگاہ دیکھتے ہیں

یہ کیسی آگ لگاتا ہے آفتاب کہ ہم

زمین و عرش کو ہوتے سیاہ دیکھتے ہیں

تم اپنی ذات سے کوئی مطالبہ نہ کرو

ہم اپنے آپ سے کر کے نباہ دیکھتے ہیں

ہوا نے شہر کا نقشہ بدل دیا شاید

غبار راہ میں ہم سیرگاہ دیکھتے ہیں

برائے نام ہے بس میرا مہتمم ہونا

کہ انتظام تو سب سربراہ دیکھتے ہیں

میں صاف گو ہوں مگر بے زبان لگتا ہوں

یہ کس طرح سے مجھے سب گواہ دیکھتے ہیں

کریں گے ہم بھی کبھی فرق میٹھے کھارے میں

ابھی تو آب کی خواہش میں چاہ دیکھتے ہیں

نکل کے نرغہ قہر و عذاب سے راحتؔ

سب اپنے واسطے جائے پناہ دیکھتے ہیں

راحت حسن

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(323) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Rahat Hasan, Ju Loog Deda O Dil Ko Tabah Dekhte Hain in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope Urdu Poetry. Also there are 32 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.6 out of 5 stars. Read the Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Rahat Hasan.