Koi Din Ho Ga K Hare Hue Loot Ayeen Ge Hum

کوئی دن ہوگا کہ ہارے ہوئے لوٹ آئیں گے ہم

کوئی دن ہوگا کہ ہارے ہوئے لوٹ آئیں گے ہم

تیری گلیوں سے گئے بھی تو کہاں جائیں گے ہم

آنسوؤں کا تو تکلف ہی کیا آنکھوں نے

خون کے گھونٹ سے کیا شوق نہ فرمائیں گے ہم

زندگی پہلے ہی جینے کی طرح کب جی ہے

اب ترے نام پہ مرنے کی سزا پائیں گے ہم

کب تک اے عہد کرم باندھنے والے کب تک

دل کو سمجھائیں گے بہلائیں گے پھسلائیں گے ہم

آہ سے عرش معلےٰ کو نہ لرزا دیں گے

تو سمجھتا ہے قیامت ہی فقط ڈھائیں گے ہم

لاکھ مرتد سہی بے دین نہیں ہیں واعظ

بت نئے ہیں تو خدا کیا نہ نیا لائیں گے ہم

جاودانی کا تصور میں بھی آیا نہ خیال

ہم سمجھتے تھے ترے عشق میں مر جائیں گے ہم

بس اب اے دل کہ قسم کھائی ہے اس ظالم نے

جو تڑپتا ہے اسے اور بھی تڑپائیں گے ہم

دور تجھ سے تو قضا بھی نہیں لے جائے گی

سر بھی آخر تری دیوار سے ٹکرائیں گے ہم

بھولتا ہی نہیں ہم کو وہ ستم گر راحیلؔ

خاک اسے یاد نہ کرنے کی قسم کھائیں گے ہم

راحیل فاروق

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(595) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Raheel Farooq, Koi Din Ho Ga K Hare Hue Loot Ayeen Ge Hum in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope Urdu Poetry. Also there are 19 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.8 out of 5 stars. Read the Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Raheel Farooq.