Apne Dil K Boojh Ko Bhari Nahi Hone Diya

اپنے دل کے بوجھ کو بھاری نہیں ہونے دیا

اپنے دل کے بوجھ کو بھاری نہیں ہونے دیا

میں نے خود پر عمر کو طاری نہیں ہونے دیا

بھر گیا تھا رنگ مجھ میں برسوں پہلے ایک عشق

حسن سے چہرے کو پھر عاری نہیں ہونے دیا

اک نئی منزل کی جانب پھر مچل کر چل پڑی

دل کی بارش کو بھی لاچاری نہیں نہیں ہونے دیا

میں نے ہر ساعت بچھائی تھی بساطِ آرزو

لمحہءِ فرصت کو بیکاری نہیں ہونے دیا

اک فقط ماں نے اتارے صدقے ہر اک پل ترے

تجھ پہ اوروں کو کبھی واری نہیں دیا

مجھ کو خود پر ضبط تھا اتنا کہ رخشندہ کبھی

آنسوؤں کا سلسلہ جاری نہیں ہونے دیا

رخشندہ نوید

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(463) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Rakhshanda Naveed, Apne Dil K Boojh Ko Bhari Nahi Hone Diya in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope Urdu Poetry. Also there are 19 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.9 out of 5 stars. Read the Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Rakhshanda Naveed.