Mubarakbaad Israfel

مبارکباد اسرافیل!!

سنا ہے آنے والا وقت کمپیوٹر پہ بھاری ہے؟

ًمجھے کیا

میں تو ادنیٰ آدمی ہوں

زندگی کا ہر حساب ان انگلیوں کی

تیس پوروں پر ہی کرتا ہوں.

ارے! پوروں سے یاد آیا

وہ اس درویش کی انگلی کی پوروں میں سسکتا

بیسواں تسبیح کا دانہ۔۔

جو اس درویش کی انگلی کی پوروں کی حرارت سے

جھلس کر مرنے والا تھا۔۔۔۔۔

سنا ہے بھاپ بن کر اڑ گیا ہے؟

دھواں بن کر اڑے یا بھاپ بن کر۔۔۔

اس کو اڑنا تھا۔۔۔ تعجب کیا؟

بھلا لمحوں کو پَر لگنے میں کوئی دیر لگتی ہے!

سنا تھا میں نے

اسرافیل اک دن صور پھونکے گا

یہ دنیا روئی کے گالوں کی صورت اڑ رہی ہو گی؟

مجھے لگتا ہے شاید

اس کی نوبت ہی نہ آ پائے

مبارکباد اسرافیل!

یہ بھی بوجھ تیرے سر سے اُترا ہے۔

رانا سعید دوشی

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(770) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Rana Saeed Doshi, Mubarakbaad Israfel in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Nazam, and the type of this Nazam is Social, Islamic, Hope Urdu Poetry. Also there are 36 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.5 out of 5 stars. Read the Social, Islamic, Hope poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Rana Saeed Doshi.