Uss Ne Kissi Ki Aah Se Darna Tu Hai Nahi

اس نے کسی کی آہ سے ڈرنا تو ہے نہیں

اس نے کسی کی آہ سے ڈرنا تو ہے نہیں

جیسے کہ شہر یار نے مرنا تو ہے نہیں

کیا فائدہ صفائی کا موقع نہ دے مجھے

اپنے کہے سے میں نے مکرنا تو ہے نہیں

کر عاق، اس کو آج ہی گھر سے نکال دے

طے ہے کہ طفلِ دل نے سدھرنا تو ہے نہیں

خود ہی نکل نہ جائوں میں اس کے مدار سے

تیرے بنا یہ وقت گزرنا تو ہے نہیں

ہے وہم لا علاج مرض، کیا کہوں حضور

اب اعتبار آپ نے کرنا تو ہے نہیں

اب کس کا انتظار ہے کچے گھڑے تجھے

بپھرا ہوا چناب اترنا تو ہے نہیں

رانا سعید دوشی

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(367) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Rana Saeed Doshi, Uss Ne Kissi Ki Aah Se Darna Tu Hai Nahi in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Love, Sad, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope Urdu Poetry. Also there are 36 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.4 out of 5 stars. Read the Love, Sad, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Rana Saeed Doshi.