Fana Ki Rahguzar Pey Manzil Baqa E Hussain Hai

فنا کی رھگذر پہ منزلِ بقا حُسَین ھے

فنا کی رھگذر پہ منزلِ بقا حُسَین ھے

یہی ھے قِصّہ مُختصر، یزید تھا، حُسَین ھے

دُکھوں نے پُوچھا: کون ھے خُدائے کائناتِ غم ؟

ٹپکتے آنسوؤں نے برملا کہا: حُسَین ھے

زمانے بھر کے سب غموں کا غمگُسار ھے یہ غم

سو درد چاھے جس طرح کا ھو، دوا حُسَین ھے

تُو مسلکوں کو چھوڑ اور گلے سے لگ یہ سوچ کر

کہ جو ترا حُسَین ھے وھی مِرا حُسَین ھے

سوالِ بیعتِ یزید پر جہاں بھی سر جُھکیں

وھاں نہیں نہیں کی گونجتی صدا حُسَین ھے

بس اتنا یاد رہ گیا دُکھوں کی داستان میں

کہ ابتدا حُسَین تھا اور انتہا حُسَین ھے

ھزاروں سال بعد بھی وھی الم، وھی کسک

قدیم ھو کے بھی بہت نیا نیا حُسَین ھے !

بچا لیا برھنگی سے جس نے دین کا بدن

وھی کٹی پھٹی لہو بھری قبا حُسَین ھے

رحمان فارس

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(957) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Rehman Faris, Fana Ki Rahguzar Pey Manzil Baqa E Hussain Hai in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Marsiya, and the type of this Nazam is Islamic Urdu Poetry. Also there are 76 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.6 out of 5 stars. Read the Islamic poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Rehman Faris.