Gar Tumhain Shak Hai Tu Phar Lo Mere Ashaar Mian

گر تُمہیں شک ھے تو پڑھ لو مِرے اشعار، میاں !

گر تُمہیں شک ھے تو پڑھ لو مِرے اشعار، میاں !

آگ سے عِطر بناتا ھُوں مَیں، عطّار میاں !

تُمہیں لاکھوں کی طلب اور مِرے بٹوے میں

گر بہت بھی ھُوئے، ھوں گے یہی دو چار، میاں !

باغ سے تُم نے چُرائے ھی نہیں آم کبھی

کیسے سمجھو گے تُم اُس جسم کے اسرار، میاں ؟

مَیں کسی تیسرے لہجے میں تُمہیں دُوں گا جواب

میری جانب سے ھے اقرار نہ انکار، میاں !

جن سے پہنچی ھے بہت خلقِ خُدا کو راحت

کیوں بھلا جائیں گے دوزخ میں وہ کُفّار، میاں ؟

رسّیاں بن کے پڑے رھتے ھیں ڈسنے کے لیے

دھیان رکھ، سانپ بھی ھوتے ھیں اداکار، میاں !

رحمان فارس

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(277) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Rehman Faris, Gar Tumhain Shak Hai Tu Phar Lo Mere Ashaar Mian in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope Urdu Poetry. Also there are 76 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.8 out of 5 stars. Read the Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Rehman Faris.