Jhankte Jhankte Kinare Se

جھانکتے جھانکتے کنارے سے

جھانکتے جھانکتے کنارے سے

رات مَیں گر پڑا ستارے سے

ویسے مَیں صف میں آخری تھا مگر

اُس نے بُلوا لیا اشارے سے

اَور پاس آگیا بچھڑ کر تُو

فائدہ ھوگیا خسارے سے

گھر نہیں، بے گھری بنائی ھے

مَیں نے وحشت کے اینٹ گارے سے

شاعروں نے کمائی کی ھے بہت

رائیگانی کے استعارے سے

تُو مرے رب کا فیصلہ ھے، میاں !

تُجھ کو پایا ھے استخارے سے

اک مُسافر کو دیکھتا تھا کوئی

شہر کے آخری منارے سے

کیا بتاؤں کہ یاد آیا کیا

ایک خوش رنگ شکر پارے سے

تلخیوں کے علاوہ کیا ملتا

ایک میٹھے کو ایک کھارے سے

کچھ نہ پوچھو کہ کیا کِیا فارس

ایک پیارے نے ایک پیارے سے

رحمان فارس

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(1386) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Rehman Faris, Jhankte Jhankte Kinare Se in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope Urdu Poetry. Also there are 76 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.7 out of 5 stars. Read the Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Rehman Faris.