Tu Mere Rokhe Pan Par Tilmila Nayyi

تُو میرے رُوکھے پن پر تلملا نئیں

تُو میرے رُوکھے پن پر تلملا نئیں

مَیں جتنا بے مروّت اب ھُوں، تھا نئیں

خوشی بےحد سُہانی کیفیت ھے

مگر غم سے زیادہ دیرپا نئیں

مِرے اشکوں کو مت بہلائیں، جائیں

یہ میرا مسئلہ ھے، آپ کا نئیں

تو کیا تیرا نہیں ھے تیرا مُنکر ؟

تو کیا تُو اپنے مُنکر کا خُدا نئیں ؟

چلو مانا نہیں جَون ایلیا مَیں

مگر تُو بھی تو کوئی فارھہ نئیں

“محبت ھوگئی” کہنا غلط ھے

محبت زندگی ھے، واقعہ نئیں

مُجھے الزام مت دے، بنتِ حوّا !

مَیں آدم ھُوں، فرشتہ نئیں، خُدا نئیں

یہی ھے داستانِ وصلِ جاناں

کہ کچھ کچھ تو ھُوا، کچھ کچھ ھُوا نئیں

تکلّف چھوڑ فارس ! پاؤں پڑ جا

ابھی وہ جانے والا ھے، گیا نئیں

رحمان فارس

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(692) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Rehman Faris, Tu Mere Rokhe Pan Par Tilmila Nayyi in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope Urdu Poetry. Also there are 76 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.2 out of 5 stars. Read the Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Rehman Faris.