Kabhi Tu Dil Ka Kaha Dil Se Wo Sune Ga Hi

کبھی تو دل کا کہا دل سے وہ سنے گا ہی

کبھی تو دل کا کہا دل سے وہ سنے گا ہی

یہ قطرہ سنگ میں سوراخ تو کرے گا ہی

وہ میرے ہاتھ سے برسات کے زمانے میں

پکوڑے کھائے گا اور چائے بھی پیے گا ہی

سہانی شام کسی دل نشیں وادی میں

وہ دو ہی ساتھ ساتھ چلے چلے گا ہی

ابھی یہ سوچ کے میں ظلم سہتی جاتی ہوں

کبھی تو ہاتھ ترے ظلم کا رکے گا ہی

یہ داغ دل نہیں جو چھپ سکے چھپانے سے

بدن کا زخم ہے اب خون تو بہے گا ہی

اسیر سب ہیں فنا کے حصار میں لیکن

خدا کی یاد سے بہتر صلہ ملے گا ہی

شعور سے ہی بشر چاند پر بھی پہنچا ہے

زمانہ علم کی دولت سے تو بڑھے گا ہی

کوئی غرور میں اعلان خود سری کر لے

خدا کے سامنے آخر کو سر جھکے گا ہی

سبیلہؔ تیرے حقیقت بیان کرنے سے

جہاں پہ راز جنوں ایک دن کھلے گا ہی

سبیلہ انعام صدیقی

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(560) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Sabeela Inam Siddiqui, Kabhi Tu Dil Ka Kaha Dil Se Wo Sune Ga Hi in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope Urdu Poetry. Also there are 23 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.9 out of 5 stars. Read the Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Sabeela Inam Siddiqui.