Aks Pani Mein Agar Qaid Kya Ja Sakta

عکس پانی میں اگر قید کیا جا سکتا

عکس پانی میں اگر قید کیا جا سکتا

عین ممکن تھا میں اس شخص کو اپنا سکتا

کاش کچھ دیر نہ پلکوں پہ ٹھہرتی شبنم

میں اسے صبر کا مفہوم تو سمجھا سکتا

بے سہارا کوئی ملتا ہے تو دکھ ہوتا ہے

میں بھی کیا ہوں کہ کسی کام نہیں آ سکتا

کتنی بے سود جدائی ہے کہ دکھ بھی نہ ملا

کوئی دھوکہ ہی وہ دیتا کہ میں پچھتا سکتا

روٹھنے والے کی آنکھیں بھی تو پر نم تھیں ظفرؔ

مجھ سے بے اشک بھلا کیسے رہا جا سکتا

صابر ظفر

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(670) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Sabir Zafar, Aks Pani Mein Agar Qaid Kya Ja Sakta in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Social Urdu Poetry. Also there are 123 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.3 out of 5 stars. Read the Social poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Sabir Zafar.