Ziker Mera Hai Asmaan Main Kiya

ذکر میرا ہے آسمان میں کیا

ذکر میرا ہے آسمان میں کیا

آ گیا ہوں میں اس کے دھیان میں کیا

سب کرشمے تعلقات کے ہیں

خاک اڑتی ہے خاکدان میں کیا

چاند تارے اتر نہیں سکتے

رات کی رات اس مکان میں کیا

پھر چلی باد سازگار مگر

کچھ رہا بھی ہے بادبان میں کیا

زندہ ہے اک قبیلۂ قابیل

میں رہوں ایسے خاندان میں کیا

سعید احمد

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(945) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Saeed Ahmad, Ziker Mera Hai Asmaan Main Kiya in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope Urdu Poetry. Also there are 22 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.9 out of 5 stars. Read the Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Saeed Ahmad.