Khud Jaye Mosaam Ki Rangat Jag Uthey Mahool Zara

کھُل جائے موسم کی رنگت، جاگ اُٹھے ماحول ذرا

کھُل جائے موسم کی رنگت، جاگ اُٹھے ماحول ذرا

رُوپ نگر کی رانی اپنا روشن چہرہ کھول ذرا

کہاں کہاں سے تیرے روپ کا درشن کرنے آئے ہیں

بنجاروں کو بھر لینے دے آنکھوں کے کشکول ذرا

اِس بستی کے پتھر پھر سے ہنسنے گانے لگ جائیں

مِیرؔا! تو اپنے گیتوں سے روحوں میں رس گھول ذرا

لوگ، زمانہ، اپنے پرائے، سب موسم کے پنچھی ہیں

تو آئے تو بن جاتا ہے جیون کا ماحول ذرا

کب تک نین دریچوں سے بہلا کر پریت نبھانی ہے

یاروں نے پھر دستک دی ہے دل دروازہ کھول ذرا

وہ صحرا کی سب سے موہنی مورت کب آسان سعیدؔ

عشق میں کچھ دن اور ابھی خود کو روہی میں رول ذرا

سعید خان

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(657) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Saeed Khan, Khud Jaye Mosaam Ki Rangat Jag Uthey Mahool Zara in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Love, Sad, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope Urdu Poetry. Also there are 34 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.2 out of 5 stars. Read the Love, Sad, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Saeed Khan.