Sarma Ki Pehli Barish

سرما کی پہلی بارش

یاد ھے۔۔۔؟

وہ سرمئی شام

جب اچانک ھی

بادل امڈ کے آئے

زور سے برسے

میرا ریشمی آنچل

پہلے تیز ھوا سے

اڑا۔۔۔

پھر بھیگا۔

ٹھٹھرتے کانپتے

آنچل سنبھالتے

میں نے کہا

"بارش کو بھی آج ھی برسنا تھا"

یہ بھی حاسد ھے

جب بھی تم سے ملنا ھو

یہ نٹ کھٹ ھو جاتی ھے

مجھے چھیڑنے لگتی ھے۔

تم ہنسے اور۔۔۔

اپنا کوٹ

مجھے اوڑھاتے بولے تھے

"یہ سرما کی پہلی بارش ھے

یہ ایسے ھی

اچانک برستی ھے

بھگوتی ھے۔"

آج بھی سرمئی شام ھے

سرما کی پہلی بارش ھے

اور میں

تنہا بھیگ رہی ھوں

صفیہ حیات

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(454) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Safia Hayat, Sarma Ki Pehli Barish in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Nazam, and the type of this Nazam is Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope Urdu Poetry. Also there are 80 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.2 out of 5 stars. Read the Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Safia Hayat.