Poetry From Book "Dewaan E Sagar" By Saghar Siddiqui

ساغر صدیقی کی کتاب 'دیوان ساغر' سے تمام شاعری

دیوان ساغر

Dewaan E Sagar

یہ جو دیوانے سے دو چار نطر آتے ہیں

Ye Jo Deewane Se Do Char Nazar Aate Hain

(Saghar Siddiqui) ساغر صدیقی

یہ جو دیوانے سے دوچار نظر آتے ہیں

Ye Jo Deewane Se Do Char Nazar Aate Hain

(Saghar Siddiqui) ساغر صدیقی

روداد محبت کیا کہیے کچھ یاد رہی کچھ بھول گئے

Rawdad E Muhabbat Kya Kahiye Kuch Yaad Kuch Bhool Gaye

(Saghar Siddiqui) ساغر صدیقی

پوچھا کسی نے حال کسی کا تو رو دیئے

Pocha Kisi Ne Haal Kisi Ka Tou Ro Diye

(Saghar Siddiqui) ساغر صدیقی

نظر نظر بے قرار سی ہے نفس نفس میں شرار سا ہے

Nazar Nazar Be-qarar Si Hai Nafas Nafas Mein Sharar Sa Hai

(Saghar Siddiqui) ساغر صدیقی

محبت مستقل غم ہے محبت غم کا گہوارہ

Muhabbat Mustaqil Gham Hai Mohabbat Gham Ka Gehwara

(Saghar Siddiqui) ساغر صدیقی

محبت کے مزاروں تک چلیں گے

Muhabbat Ke Mazaon Tak Chalen Ge

(Saghar Siddiqui) ساغر صدیقی

موج در موج کناروں کو سزا ملتی ہے

Mauj Dar Mauj Kinaron Ko Saza Milti Hai

(Saghar Siddiqui) ساغر صدیقی

کیا سماں تھا بہار آنے سے پہلے

Kya Sama Tha Bahar Se Pehle

(Saghar Siddiqui) ساغر صدیقی

کلیوں کی مہک ہوتا تاروں کی ضیا ہوتا

Kaliyon Ki Mehek Hota Taro Ki Ziya Hota

(Saghar Siddiqui) ساغر صدیقی

ہم بڑی دور سے آئے ہیں تمہاری خاطر

Hum Badi Door Se Aaye Hain Tumhari Khatir

(Saghar Siddiqui) ساغر صدیقی

ہے دعا یاد مگر حرف دعا یاد نہیں

Hai Dua Yaad Magar Harf-e-dua Yaad Nahin

(Saghar Siddiqui) ساغر صدیقی

دستور یہاں بھی گونگے ہیں فرمان یہاں بھی اندھے ہیں

Dastoor Yahan Bhi Gonge Hain Farmaan Yahan Bhi Andhe Hai

(Saghar Siddiqui) ساغر صدیقی

چراغ طور جلائو بڑا اندھیرا ہے

Charag E Toor Jalao Bada Andhera Hai

(Saghar Siddiqui) ساغر صدیقی

چاک دامن کو جو دیکھا تو ملا عید کا چاند

Chak E Daman Ko Jo Dekha To Mila Eid Ka Chand

(Saghar Siddiqui) ساغر صدیقی

بھولی ہوئی صدا ہوں مجھے یاد کیجئے

Bhooli Hui Sada Hun Mujhe Yaad Kijiye

(Saghar Siddiqui) ساغر صدیقی

بزرگوں کی دعائیں مل رہی ہیں

Buzurgo Ki Duaye Mil Rahi Hain

(Saghar Siddiqui) ساغر صدیقی

برگشتہ یزدان سے کچھ بھول ہوئی ہے

Burgishta Yazdan Se Kuch Bhol Hoe Hai

(Saghar Siddiqui) ساغر صدیقی

بات پھولوں کی سنا کرتے تھے

Baat Pholon Ki Suna Karte The

(Saghar Siddiqui) ساغر صدیقی

اے حسن لالہ فام ذرا آنکھ تو ملا

Ay Hussan E Lalaa Faam Zara Aankh To Mila

(Saghar Siddiqui) ساغر صدیقی

ایک وعدہ ہے کسی کا جو وفا ہوتا نہیں

Aik Wada Hai Kisi Ka Jo Wafa Hota Nahin

(Saghar Siddiqui) ساغر صدیقی

عورت

Agar Bazam E Hasti Mein Aurat Na Hoti

(Saghar Siddiqui) ساغر صدیقی

آج روٹھے ہوئے ساجن کو بہت یاد کیا

Aaj Roothe Hue Saajan Ko Bohat Yaad Kiya

(Saghar Siddiqui) ساغر صدیقی

ذرا گیسوئے یار کھولے گئے ہیں

Zara Gesuon Yaar Kholey Gaye Hain

(Saghar Siddiqui) ساغر صدیقی

Records 1 To 24 (Total 68 Records)