Hijrat Zada AnkhoN Ki Rawani Se Mila Hae

ہجرت زدہ آنکھوں کی روانی سے ملا ہے

ہجرت زدہ آنکھوں کی روانی سے ملا ہے

کیا چین مجھے درد کے پانی سے ملا ہے

بچپن تھا سکوں چین تھا الفت تھی وفا تھی

ہر درد مجھے یار جوانی سے ملا ہے

اس وقت قلم ساتھ مرا چھوڑ گیا ہے

کردار جہاں جا کے کہانی سے ملا ہے

پھر یاد مجھے آ یا ہے اک دوست پرانا

پھر زخم نیا یاد پرانی سے ملا ہے

اس واسطے میں خوش ہوں وطن چھوڑ کے ساجد

وہ شخص مجھے نکل مکانی سے ملا ہے

ساجد محمود رانا

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(1892) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Sajid Mahmood Rana, Hijrat Zada AnkhoN Ki Rawani Se Mila Hae in Urdu. This famous Urdu Shayari is a , and the type of this Nazam is Urdu Poetry. Also there are 21 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.9 out of 5 stars. Read the poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Sajid Mahmood Rana.