Apni Tabiyat Main Tu Lutf Ghaam Paida Kar Ley

اپنی طبیعت میں تُو لطف غم پیدا کر لے

اپنی طبیعت میں تُو لطف غم پیدا کر لے

اپنے دیدئہ د ل میں عادت شبنم پیدا کر لے

کچھ تو اپنے دین و ملت کیلئے کرم پیدا کر لے

مثل خورشید اپنے کردار میں نور عالم پیدا کر لے

اقوام غیر سے بدلہٴ اسلام کی قسم پیدا کر لے

مٹا دے خود سے احساس رندی، جذبہٴ ارم پیدا کر لے

نوائے پیغمبر جب تسلط کفر کے شور میں تھی

صدق عشق صدیق  میں تھا گزاری جنہوں نے رات ثور میں تھی

ترے دل میں کیسا ہے جذبہ نبی کی مریدی کا

تم نے بخوشی مذ اق اڑایا جس کی فقیری کا

نہ تو اسیر ہوا کبھی نہ تجھے احساس ہے اسیری کا

بس اب تو سہارا غم باقی ہے دین اسلام کی پیری کا

دشمن دین کیلئے دہشت ہے دو ر شمشیری کا

نہ تجھے مرگ دین کی فکر نہ ،نہ غم ہے بیدار ضمیری کا

آہ کیا ہی حسین ترنم ہوتا ہے آواز اذان میں

چار سُو پھیل جاتی ہے نوائے حق سارے جہاں میں

کیوں نہ فریاد اقصیٰ سنی ترے کانوں نے

یہ کیا شو ق رنگیں پال رکھے ہیں ان جوانوں نے

نہ ترا دل نرم کیا ،نہ خون گرم کیا اذانوں نے

آج تک پیام حق چھپا رکھا ہے ،ان رنگیں بیانوں نے

جھک جھک کے سلام کیا تھا جن کو زمانوں نے

تو کیا جانے کہ کیا جوہر دکھائے تھے نبی کے پروانوں نے

یہ نشہ پیدا کیا تھاعروق مسلم میں ،ایمان و جہاد کے جاموں نے

پھر حق کی گواہی دے ڈالی تھی کفار کے ایوانوں نے !

سردار زبیر احمد

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(3015) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Sardar Zubair Ahmed, Apni Tabiyat Main Tu Lutf Ghaam Paida Kar Ley in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, Marsiya, and the type of this Nazam is Islamic Urdu Poetry. Also there are 33 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.7 out of 5 stars. Read the Islamic poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Sardar Zubair Ahmed.