Mere Zindagi Hijr O Wisaal Ka Rangeen Fasana Hai

میری زندگی ہجر و وصال کا رنگیں فسانہ ہے

میری زندگی ہجر و وصال کا رنگیں فسانہ ہے

میں جینے کے قابل تو نہ ہوں وقت اجل کا بہانہ ہے

ہر فرد ریاض ہستی میں تیر حرص کا نشانہ ہے

نہ جام ہیں نہ شراب ، پھر بھی نام اس کا میخانہ ہے

اے ناداں بنائے خستہ پہ نہ قصر وفا تعمیر کر

گرا دے گی سے ہوائے غم نہ شرمندہ اپنا ضمیر کر

تری کتاب کے سادہ ورق پہ کوئی داغ نہ ملا

ترے شہر میں لہُو سے جلنے والا کوئی چر اغ نہ ملا

تری شان میں کو ئی قصیدہ لکھتا مگر وقت فراغ نہ ملا

مجھے ان بے وفاوٴں کے شہر میں کسی با وفا کا سراغ نہ ملا

میں دل کے زخموں پہ مرہم رکھ کے سوتا ہوں

میں مزرع دل میں خود ہی بیج ستم بو تا ہوں

ترے جانے کے بعد ہم نے کیسے وہ گھڑی گزاری

زلزلہٴ دل سے میرے چہرے پہ تو نہ ہو سکی وہ لرزش طاری

ترا ارادہ تک نہ بد ل سکی میری لا چا ری

ہم نے پُوری زندگی میں نہ دیکھی ایسی کوئی رات بھاری

ترا چہرہ پڑھ کر بھی مجھے وہ لطف غزل نہ آیا

شاید مجھ سے روز روز مل کر تجھے بھی لطف وصل نہ آیا

تری محفل میں ترے پروانے ہزار تھے

ٹھہری جو تری نظر مجھ پر پھر بیتاب ترے منقار تھے

ہر سُو نمود حُسن کے گرم بازار تھے

آہ !ہم تری صورت کے سوا سبھی سے بیزار تھے

تم کبھی مجھ سے یوں بھی بچھڑ جاوٴ گے مجھے گماں نہ تھا

وقت ملاقات تو طویل تھا مگر ملاقات کا سا ماں نہ تھا

خون کے دیپ جلا کر ہم نے تری محفل سجائی تھی

خون جگر دیے بغیر تری دید تک کہاں میری رسائی تھی

میرے دفتر قسمت میں تحریر تری جدائی تھی

قصور تیرا کچھ بھی نہیں میرے رب کو منظور میری رسوائی تھی

میرے پہلو میں خرام مے کی خرامی پہ میرا دل بھی مچلتا رہا

جو آگ لگائی تھی تری آنکھوں نے برسوں اس سے دھواں اٹھتا رہا

سردار زبیر احمد

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(2463) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Mere Zindagi Hijr O Wisaal Ka Rangeen Fasana Hai by Sardar Zubair Ahmed - Read Sardar Zubair Ahmed's best Shayari Mere Zindagi Hijr O Wisaal Ka Rangeen Fasana Hai at UrduPoint. Here you can read the best poetry Mere Zindagi Hijr O Wisaal Ka Rangeen Fasana Hai of Sardar Zubair Ahmed. Mere Zindagi Hijr O Wisaal Ka Rangeen Fasana Hai is the most famous poetry by Sardar Zubair Ahmed. People love to read poetry by Sardar Zubair Ahmed, and Mere Zindagi Hijr O Wisaal Ka Rangeen Fasana Hai by Sardar Zubair Ahmed is best among the whole collection of poetry by Sardar Zubair Ahmed.

Sardar Zubair Ahmed is the most famous Urdu Poet. Therefore, people love to read Urdu Poetry of Sardar Zubair Ahmed. At UrduPoint, you can find the complete collection of Urdu Poetry of Sardar Zubair Ahmed. On this page, you can read Mere Zindagi Hijr O Wisaal Ka Rangeen Fasana Hai by Sardar Zubair Ahmed. Mere Zindagi Hijr O Wisaal Ka Rangeen Fasana Hai is the best poetry by Sardar Zubair Ahmed.

Read the Sardar Zubair Ahmed's best poetry Mere Zindagi Hijr O Wisaal Ka Rangeen Fasana Hai here at UrduPoint; you will surely like it. If we make a list of Sardar Zubair Ahmed's best Shayari, Mere Zindagi Hijr O Wisaal Ka Rangeen Fasana Hai of Sardar Zubair Ahmed will be at the top. Many people, who love the Urdu Shayari of Sardar Zubair Ahmed, regard it as the best poetry Mere Zindagi Hijr O Wisaal Ka Rangeen Fasana Hai of Sardar Zubair Ahmed.

We recommend you read the most famous poetry, Mere Zindagi Hijr O Wisaal Ka Rangeen Fasana Hai of Sardar Zubair Ahmed here, you will surely love it. Also, don't forget to share it with others.