Khawab Main Manzar Reh Jata Hai

خواب میں منظر رہ جاتا ہے

خواب میں منظر رہ جاتا ہے

تکیے پر سر رہ جاتا ہے

آ پڑتی ہے جھیل آنکھوں میں

ہاتھ میں پتھر رہ جاتا ہے

روز کسی حیرت کا دھبہ

آئینے پر رہ جاتا ہے

دل میں بسنے والا اک دن

جیب کے اندر رہ جاتا ہے

ندیا پر ملنے کا وعدہ

میز کے اوپر رہ جاتا ہے

سال گزر جاتا ہے سارا

اور کلینڈر رہ جاتا ہے

آنگن کی خواہش میں کوئی

بام کے اوپر رہ جاتا ہے

لگ جاتی ہے ناؤ اس پار

اور سمندر رہ جاتا ہے

رخصت ہوتے ہوتے کوئی

دروازے پر رہ جاتا ہے

سرفراز زاہد

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(1565) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Sarfraz Zahid, Khawab Main Manzar Reh Jata Hai in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Love, Sad, Social, Funny, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope Urdu Poetry. Also there are 19 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.2 out of 5 stars. Read the Love, Sad, Social, Funny, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Sarfraz Zahid.