Subh Ke Shore Main Namon Ki Farawani Main

صبح کے شور میں ناموں کی فراوانی میں

صبح کے شور میں ناموں کی فراوانی میں

عشق کرتا ہوں اسی بے سر و سامانی میں

سورما جس کے کناروں سے پلٹ آتے ہیں

میں نے کشتی کو اتارا ہے اسی پانی میں

صوفیہ، تم سے ملاقات کروں گا اک روز

کسی سیارے کی جلتی ہوئی عریانی میں

میں نے انگور کی بیلوں میں تجھے چوم لیا

کر دیا اور اضافہ تری حیرانی میں

کتنا پر شور ہے جسموں کا اندھیرا ثروتؔ

گفتگو ختم ہوئی جاتی ہے جولانی میں

ثروت حسین

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(1480) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Sarwat Hussain, Subh Ke Shore Main Namon Ki Farawani Main in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Social Urdu Poetry. Also there are 56 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.1 out of 5 stars. Read the Social poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Sarwat Hussain.