Ab Inhen Mujh Say Kuch Hijaab Nahi

اب انہیں مجھ سے کچھ حجاب نہیں

اب انہیں مجھ سے کچھ حجاب نہیں

اب ان آنکھوں میں کوئی خواب نہیں

میری منزل ہے روشنی لیکن

میری قدرت میں آفتاب نہیں

تجھ کو ترتیب دے رہا ہوں میں

میری غزلوں کا انتخاب نہیں

اب سنا ہے کہ میرے دل کی طرح

ایک صحرا ہے ماہتاب نہیں

شام اتنی کبھی اداس نہ تھی

کیوں تری زلف میں گلاب نہیں

یوں نہ پڑھیے کہیں کہیں سے ہمیں

ہم بھی انسان ہیں کتاب نہیں

کہکشاں سو رہی ہے اے شبنمؔ

حسن آنگن میں محو خواب نہیں

شبنم رومانی

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(1040) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Shabnam Romani, Ab Inhen Mujh Say Kuch Hijaab Nahi in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Sad Urdu Poetry. Also there are 16 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.2 out of 5 stars. Read the Sad poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Shabnam Romani.