Social Poetry of Shahid Iqbal - Social Shayari

شاہداقبال کی معاشرتی شاعری

واقف تھا اپنے شہر کے غارت گروں سے میں

Waqif Tha Apne Shehar Ke Garat Garon Se Main

(Shahid Iqbal) شاہداقبال

اُسی سے پوچھئے تاثیر عہدِ رفتہ کی

Usi Se Pochiye Taaser Ahad E Rafta Ki

(Shahid Iqbal) شاہداقبال

میاں ‘ دوام کے دعوے تھے سب غلط میرے

Mia Dwam Ke Daavy The Sab Galat Mere

(Shahid Iqbal) شاہداقبال

میں اِس لئے ہجوم کا حصہ نہیں بنا

Main Is Liye Hajom Ka Hissa Nahi Bana

(Shahid Iqbal) شاہداقبال

میں اپنے دل میں تُو دنیا میں غرق ہے مرے دوست

Main Apne Dil Mein To Duniya Garq Hai Mere Dost

(Shahid Iqbal) شاہداقبال

لہو سے پھول بنا ‘ نقش لوحِ دل پر کھینچ

Lahu Se Phol Bana Naqash Lahu E Dil Par Khainch

(Shahid Iqbal) شاہداقبال

کیوں جوشِ جنوں میں نہ کروں اپنی قبا چاک

Kiyun Josh E Janoon Man Na Kron Apni Qaba Chak

(Shahid Iqbal) شاہداقبال

اِسی پرانی حویلی میں لوگ بستے بھی ہیں

Isi Porani Haveli Mein Laug Baste Bhi Hai

(Shahid Iqbal) شاہداقبال

حالات پہ رنجیدہ یا آپ ہیں یا میں ہوں

Halat Pe Ranjeeda Ya Aap Hai Ya Main Hun

(Shahid Iqbal) شاہداقبال

گناہ کرنا تھا دل کو تباہ کرنا تھا

Gunah Karna Tha Dil Ko Tabah Karna Tha

(Shahid Iqbal) شاہداقبال

غزل کی شاخ سے تازہ ثمر اتاریں گے

Gazal Ki Shakh Se Tazaah Sabar Utaden Ge

(Shahid Iqbal) شاہداقبال

دنیا پھرے ‘ نہ غیب کے باغوں میں سیر کی

Duniya Phire Na Taig Ke Bagon Mein Sair Ki

(Shahid Iqbal) شاہداقبال

دل کا زنگ اُتارے اور اُمنگ بھرے

Dil Ka Zang Utare Aur Umang Bhade

(Shahid Iqbal) شاہداقبال

دل ہی ہرا بھرا ہے نہ دنیا ہی سبز ہے

Dil Hi Hara Bhara Hai Na Duniya Hi Sabaz Hai

(Shahid Iqbal) شاہداقبال

دست بستہ ہوں،شکستہ ہوں، بہت خستہ ہوں

Dast Basta Hun Shikasta Hun Buhat Khasta Hun

(Shahid Iqbal) شاہداقبال

بھاگا تھا میں تو اپنی کسی بازگشت پر

Bhaga Tha Main To Apni Kisi Bazgasht Par

(Shahid Iqbal) شاہداقبال

باطن نظر نہ آتا تھا ظاہر کی آنکھ سے

Batin Nazar Na Ata Tha Zahir Ki Ankh Se

(Shahid Iqbal) شاہداقبال

اکثر کے آئینے میں انوکھا ہی عکس تھا

Aksar Ke Aine Mein Anokha Hi Aks Tha

(Shahid Iqbal) شاہداقبال

Social Shayari of Shahid Iqbal - Poetry of Social. Read the best collection of Social poetry by Shahid Iqbal, Read the famous Social poetry, and Social Shayari by the poet. Social Nazam and Social Ghazals of the poet. The best collection of Shayari by Shahid Iqbal online. You can also read different types of poetries by the poet including Social Shayari from different books of the poet.