Tairay Waday Ko Kabhi Jhoot Nahi Samjhun Ga

تیرے وعدے کو کبھی جھوٹ نہیں سمجھوں گا

تیرے وعدے کو کبھی جھوٹ نہیں سمجھوں گا

آج کی رات بھی دروازہ کھلا رکھوں گا

دیکھنے کے لیے اک چہرہ بہت ہوتا ہے

آنکھ جب تک ہے تجھے صرف تجھے دیکھوں گا

میری تنہائی کی رسوائی کی منزل آئی

وصل کے لمحے سے میں ہجر کی شب بدلوں گا

شام ہوتے ہی کھلی سڑکوں کی یاد آتی ہے

سوچتا روز ہوں میں گھر سے نہیں نکلوں گا

تاکہ محفوظ رہے میرے قلم کی حرمت

سچ مجھے لکھنا ہے میں حسن کو سچ لکھوں گا

شہریار

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(281) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Shahryar, Tairay Waday Ko Kabhi Jhoot Nahi Samjhun Ga in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Social Urdu Poetry. Also there are 150 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.4 out of 5 stars. Read the Social poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Shahryar.