Teri Sansen Mujh Tak Atay Baadal Ho Jayen

تیری سانسیں مجھ تک آتے بادل ہو جائیں

تیری سانسیں مجھ تک آتے بادل ہو جائیں

میرے جسم کے سارے علاقے جل تھل ہو جائیں

ہونٹ ندی سیلاب کا مجھ پہ دروازہ کھولے

ہم کو میسر ایسے بھی اک دو پل ہو جائیں

دشمن دھند ہے کب سے میری آنکھوں کے درپئے

ہجر کی لمبی کالی راتیں کاجل ہو جائیں

عمر کا لمبا حصہ کر کے دانائی کے نام

ہم بھی اب یہ سوچ رہے ہیں پاگل ہو جائیں

شہریار

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(514) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Shahryar, Teri Sansen Mujh Tak Atay Baadal Ho Jayen in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Social Urdu Poetry. Also there are 150 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.4 out of 5 stars. Read the Social poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Shahryar.