Tilsam Khatam Chalo Aah Be Assar Ka Howa

طلسم ختم چلو آہ بے اثر کا ہوا

طلسم ختم چلو آہ بے اثر کا ہوا

وہ دیکھو جسم برہنہ ہر اک شجر کا ہوا

سناؤں کیسے کہ سورج کی زد میں ہیں سب لوگ

جو حال رات کو پرچھائیوں کے گھر کا ہوا

صدا کے سائے میں سناٹوں کو پناہ ملی

عجب کہ شہر میں چرچا نہ اس خبر کا ہوا

خلا کی دھند ہی آنکھوں پہ مہربان رہی

حریف کوئی افق کب مری نظر کا ہوا

میں سوچتا ہوں مگر یاد کچھ نہیں آتا

کہ اختتام کہاں خواب کے سفر کا ہوا

شہریار

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(547) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Shahryar, Tilsam Khatam Chalo Aah Be Assar Ka Howa in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Social Urdu Poetry. Also there are 150 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.1 out of 5 stars. Read the Social poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Shahryar.