Aaj Tak Is Ki Muhabbat Ka Nasha Taari Hai

آج تک اس کی محبت کا نشہ طاری ہے

آج تک اس کی محبت کا نشہ طاری ہے

پھول باقی نہیں خوشبو کا سفر جاری ہے

سحر لگتا ہے پسینے میں نہایا ہوا جسم

یہ عجب نیند میں ڈوبی ہوئی بے داری ہے

آج کا پھول تری کوکھ سے ظاہر ہوگا

شاخ دل خشک نہ ہو اب کے تری باری ہے

دھیان بھی اس کا ہے ملتے بھی نہیں ہیں اس سے

جسم سے بیر ہے سائے سے وفا داری ہے

دل کو تنہائی کا احساس بھی باقی نہ رہا

وہ بھی دھندلا گئی جو شکل بہت پیاری ہے

اس تگ و تاز میں ٹوٹے ہیں ستارے کتنے

آسماں جیت سکا ہے نہ زمیں ہاری ہے

کوئی آیا ہے ذرا آنکھ تو کھولو شہزادؔ

ابھی جاگے تھے ابھی سونے کی تیاری ہے

شہزاد احمد

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(827) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Shahzad Ahmed, Aaj Tak Is Ki Muhabbat Ka Nasha Taari Hai in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Sad Urdu Poetry. Also there are 101 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.2 out of 5 stars. Read the Sad poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Shahzad Ahmed.