Yeh Kis Ke Anay Ke Amkaan Dikhayi Date Hain

یہ کس کے آنے کے امکاں دکھائی دیتے ہیں

یہ کس کے آنے کے امکاں دکھائی دیتے ہیں

دل و نگاہ غزل خواں دکھائی دیتے ہیں

وہ اہل دل جو ترے آسرے پہ جیتے تھے

رہین گردش دوراں دکھائی دیتے ہیں

ہمیں تو آج بھی غم ہائے دو جہاں ہیں عزیز

وہ اور ہیں جو گریزاں دکھائی دیتے ہیں

اک آگ پھر بھڑک اٹھی ہے دیدہ و دل میں

کچھ اشک پھر سر مژگاں دکھائی دیتے ہیں

یہ کس کے جلوۂ رنگیں کا عکس ہے شہزادؔ

دل و نگاہ فروزاں دکھائی دیتے ہیں

شہزاد احمد

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(352) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Shahzad Ahmed, Yeh Kis Ke Anay Ke Amkaan Dikhayi Date Hain in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Social Urdu Poetry. Also there are 101 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.9 out of 5 stars. Read the Social poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Shahzad Ahmed.