Ju Tu Ne Hum Ko Dekhaya Hai Kiya Sabhi Dekhain

جو تو نے ہم کو دکھایا ہے کیا سبھی دیکھیں؟

جو تو نے ہم کو دکھایا ہے کیا سبھی دیکھیں؟

ہے تاب جن کی نگاہوں میں بس وہی دیکھیں

کیوں شرمسار کریں دل کو غیر کے آگے

ملائیں خود سے نظر اور بے خودی دیکھیں

اتر کے آئیں کبھی وہ بھی بام سے اپنے

کبھی تو وہ بھی مرا ذوقِ بندگی دیکھیں

جو دیکھ سکتے نہیں. کچھ بھی تیرگی کے سوا

مرے دروں میں بھلاکیسے روشنی دیکھیں

جو دیکھتے ہیں مرا کھل کے پھر سے مرجھانا

انھیں کہو کہ مرا شوقِ خندگی دیکھیں

اسی لئے تو تمہیں روز ہنس کے ملتے ہیں

تمہارے ہونٹوں پہ کھلتی کوئی کلی دیکھیں

شائستہ سحر

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(1114) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Shaista Sehar, Ju Tu Ne Hum Ko Dekhaya Hai Kiya Sabhi Dekhain in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope Urdu Poetry. Also there are 55 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.5 out of 5 stars. Read the Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Shaista Sehar.