Tu Aik Lamha Tha Main Jiss Main Khul K Sona Tha

تو ایک لمحہ تھا میں جس میں کھل کے سونا تھا

تو ایک لمحہ تھا میں جس میں کھل کے سونا تھا

پھر اس کے بعد تو بس عمر بھر کو رونا تھا

یہ کون ڈال گیا خشک برگ خوابوں کے

حریمِ دل کو ابھی آنسوؤں سے دھونا تھا

ہزار صدیوں کی تاریکیاں مٹانی تھیں

ستارہ وار تری ذات میں سمونا تھا

تری نگاہ کہ خوگر رہی تمازت کی

گلی کے درمیاں، چھاؤں کا بیچ ہونا تھا

جہاں کو روشنی دینی تھی، تیرے جلوؤں سے

سو نوکِ مژگاں میں تارے مجھے پرونا

میں ڈر نہ جاؤں کہیں اپنی ہی صداؤں سے

میں خود سے دور بہت دور جا کے رونا تھا

یہ راستہ تو کسی اور سمت جاتا ہے

وہ رہ کہاں ہے سحر جس پہ تجھ کو کھونا تھا

شائستہ سحر

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(1324) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Shaista Sehar, Tu Aik Lamha Tha Main Jiss Main Khul K Sona Tha in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope Urdu Poetry. Also there are 55 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.4 out of 5 stars. Read the Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Shaista Sehar.