Din Kahan Pehlay Se Ab Raat Kahan Pehli Si

دن کہاں پہلے سے اب رات کہاں پہلی سی

دن کہاں پہلے سے اب رات کہاں پہلی سی

جذبۂ شوق میں وہ بات کہاں پہلی سی

وقت ہر شئے کے خد و خال بدل دیتا ہے

میں زبوں حال، مری ذات کہاں پہلی سی

جس کے آنے سے زمیں دل کی مہک اٹھتی تھی

اب برستی ہے وہ برسات کہاں پہلی سی

میری پہچان وہی، نام وہی، میں بھی وہی

گو کہ سب کچھ ہے وہی بات کہاں پہلی سی

ایک ہی تھالی میں کھاتے تھے کبھی شاہ و گدا

آج دنیا میں مساوات کہاں پہلی سی

یوں تو چھاتی ہے گھٹا دل کے فلک پر لیکن

ہوتی ہے بارشِ نغمات کہاں پہلی سی

میلاسوچوں کا لگا رہتا ہے شاؔد آنکھوں میں

نیند آتی ہے اکسمات کہاں پہلی سی

شمشاد شاد

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(567) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Shamshad Shad, Din Kahan Pehlay Se Ab Raat Kahan Pehli Si in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Social Urdu Poetry. Also there are 10 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.8 out of 5 stars. Read the Social poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Shamshad Shad.