Yeh Jab Hai Ke Ik Khawab Se Rishta Hai Hamara

یہ جب ہے کہ اک خواب سے رشتہ ہے ہمارا

یہ جب ہے کہ اک خواب سے رشتہ ہے ہمارا

دن ڈھلتے ہی دل ڈوبنے لگتا ہے ہمارا

چہروں کے سمندر سے گزرتے رہے پھر بھی

اک عکس کو آئینہ ترستا ہے ہمارا

ان لوگوں سے کیا کہیے کہ کیا بیت رہی ہے

احوال مگر تو تو سمجھتا ہے ہمارا

ہر موڑ پہ پڑتا ہے ہمیں واسطہ اس سے

دنیا سے الگ کہنے کو رستہ ہے ہمارا

شہر یار

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(860) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Shehr Yar, Yeh Jab Hai Ke Ik Khawab Se Rishta Hai Hamara in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Sad Urdu Poetry. Also there are 13 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.2 out of 5 stars. Read the Sad poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Shehr Yar.