Jahan Pey Basna Hai Mujh Ko Ab Wo Jahan Ejaad Ho Raha Hai

جہاں پہ بسنا ہے مجھ کو اب وہ جہان ایجاد ہو رہا ہے

جہاں پہ بسنا ہے مجھ کو اب وہ جہان ایجاد ہو رہا ہے

نئی زمیں اور اک نیا آسمان ایجاد ہو رہا ہے

کسی گلی میں سرائے فانی کی تم کو اب ہم نہیں ملیں گے

وہ قریۂ جاوداں میں اپنا مکان ایجاد ہو رہا ہے

وہ جلد پہنچے گا تم تلک تم سنانی اپنی اسے سنانا

بس ایک لمحہ رکو مرا ترجمان ایجاد ہو رہا ہے

تم اک کنارا ہم اک کنارا زمانہ آب رواں ہو جیسے

یہ فاصلہ اب ہمارے ہی درمیان ایجاد ہو رہا ہے

بدن سے میرے وہ پوچھتی ہے بتاؤ عاشق کہاں ہے میرا

دھڑک کے دل یہ جواب دیتا ہے جان ایجاد ہو رہا ہے

بہت چلایا گیا ہے ہم کو خبر ہو اس تیز دھوپ کو اب

ہمارا دشت تپاں میں اک سائبان ایجاد ہو رہا ہے

شہزاد رضا لمس

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(426) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Shehzad Raza Lams, Jahan Pey Basna Hai Mujh Ko Ab Wo Jahan Ejaad Ho Raha Hai in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope Urdu Poetry. Also there are 10 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.5 out of 5 stars. Read the Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Shehzad Raza Lams.