App Ki Nazar Mujh Pey Agar Ho Jaye

آپ کی ایک نظر مجھ پہ اگر ہو جائے

آپ کی ایک نظر مجھ پہ اگر ہو جائے

زندگی چین سے دو دن کی بسر ہو جائے

آنکھ وہ آنکھ ہے، ملتے ہی اثر ہو جائے

تِیر دہ تِیرکہ پَیوستِجِگر ہو جائے

رازِ دل بھی ہو عیاں، خونِ جگر مفت بہے

ہائے وہ چشم کہ جو اشکوں سے تر ہو جائے

کاش اے دل تری دھڑکن کی صدا گونج اٹھے

کاش ان کو مری حالت کی خبر ہو جائے!

یکسوئیچاہئے، گرزیست نہیں موت سہی

سر نہ ہو چاہے، مہم آج یہ سر ہو جائے

یہ زمانہ ہے کبھی اپنا، کبھی اوروں کا

کچھ بھروسہ نہیں جب چاہے جدھر ہو جائے

تم سمجھتے ہو گذر جائیگی عالم شبِ غم

وہ شبِ غم ہی نہیں، جسکی سحر ہو جائے

سید عالم واسطی

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(724) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Syed Alam Wasti, App Ki Nazar Mujh Pey Agar Ho Jaye in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope Urdu Poetry. Also there are 32 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.8 out of 5 stars. Read the Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Syed Alam Wasti.