Tumhe Batao Puraka Hai Baar Baar Kisay

تمہیں بتاؤ پکارا ہے بار بار کسے

تمہیں بتاؤ پکارا ہے بار بار کسے

عزیز کہتے ہیں غم ہائے روزگار کسے

سکوت راز کہو یا سکوت مجبوری

مگر لبوں کی جسارت تھی ناگوار کسے

خزاں میں کس نے بہاروں کی دل کشی بھر دی

دعائیں دیتا ہے دامن کا تار تار کسے

کہاں وہ داغ کہ دل کا گماں کرے کوئی

سمجھئے عہد تمنا کی یادگار کسے

نسیم صبح کا غنچوں کو انتظار سہی

ہوائے دشت ہوں میں میرا انتظار کسے

شگفتگی کا اشارہ ہے پھول برسیں گے

نہ جانے آج نوازے گی شاخ دار کسے

جراحتوں کے خزانے لٹا دیے تاباںؔ

کیا ہے راہ کے کانٹوں نے اتنا پیار کسے

غلام ربانی تاباںؔ

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(598) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of TABAN GHULAM RABBANI, Tumhe Batao Puraka Hai Baar Baar Kisay in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Social Urdu Poetry. Also there are 33 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.7 out of 5 stars. Read the Social poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of TABAN GHULAM RABBANI.