Dhomain Machayain Sabza Rondin Phoolon Ko Pamal Karain

دھومیں مچائیں سبزہ روندیں پھولوں کو پامال کریں

دھومیں مچائیں سبزہ روندیں پھولوں کو پامال کریں

جوش جنوں کا یہ عالم ہے اب کیا اپنا حال کریں

دشت جاں میں ایک خوشی کی لہر کہاں تک دوڑے گی

وصل کے اک اک لمحے کو ہم کیوں کر ماہ و سال کریں

جان سے بڑھ کر دل ہے پیارا دل سے زیادہ جان عزیز

درد محبت کا اک تحفہ کس کس کو ارسال کریں

ننگ کرم ہے سوز الم سے اہل دل کی محرومی

درد عشق متاع جاں ہے صاحب کچھ تو خیال کریں

موسم بدلے پھر بھی ہے آشوب وصال و ہجر وہی

حال زمانے کا جب یہ ہو کیا ماضی کیا حال کریں

روح کی ایک اک چوٹ ابھاریں دل کا ایک اک زخم دکھائیں

ہم سے ہو تو نمایاں کیا کیا اپنے خد و خال کریں

قرض بھلا کیا دے گا کوئی بھیک بھی ملنی مشکل ہے

ناداروں کی اس بستی میں کس سے جا کے سوال کریں

ہر اک درد کو اپنا جانیں ہر اک غم کو اپنائیں

خواہ کسی کی دولت غم ہو دل کو مالا مال کریں

بے ہنری کو ہنر کرے یہ اہل ہنر کا دشمن ہے

چرخ کج رفتار ہے آخر تابشؔ ہم بھی خیال کریں

تابش دہلوی

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(313) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Tabish Dehlvi, Dhomain Machayain Sabza Rondin Phoolon Ko Pamal Karain in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Sad Urdu Poetry. Also there are 30 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.3 out of 5 stars. Read the Sad poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Tabish Dehlvi.