Thehray Pani Pay Haath Mara Tha

ٹھہرے پانی پہ ہاتھ مارا تھا

ٹھہرے پانی پہ ہاتھ مارا تھا

دوستوں کو کہاں پکارا تھا

چھوڑ آیا تھا میز پر چائے

یہ جدائی کا استعارا تھا

روح دیتی ہے اب دکھائی مجھے

آئینہ آگ سے گزارا تھا

میری آنکھوں میں آ کے راکھ ہوا

جانے کس دیس کا ستارا تھا

وہ تو صدیوں سے میری روح میں تھا

عکس پتھر سے جو ابھارا تھا

زندگی اور کچھ نہ تھی توقیرؔ

طفل کے ہاتھ میں غبارہ تھا

توقیر عباس

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(2119) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Tauqeer Abbas, Thehray Pani Pay Haath Mara Tha in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Sad Urdu Poetry. Also there are 14 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.6 out of 5 stars. Read the Sad poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Tauqeer Abbas.