Woh Aayi Shaam Gham Waqf Bulaa Honay Ka Waqt Aaya

وہ آئی شام غم وقف بلا ہونے کا وقت آیا

وہ آئی شام غم وقف بلا ہونے کا وقت آیا

تڑپنے لوٹنے کا دم فنا ہونے کا وقت آیا

انہیں اپنی جفاؤں پر پشیمانی ہوئی آخر

شریک ماتم‌ اہل وفا ہونے کا وقت آیا

اداسی ہر سحر کہتی ہے مجھ سے بزم انجم کی

اٹھ اے غم دیدہ اٹھ محو بکا ہونے کا وقت آیا

ترا ملنا کسے ملتا ہے ممنون مقدر ہوں

مگر افسوس ملتے ہی جدا ہونے کا وقت آیا

بہار آئی ہر اک ذرے سے پھوٹی حسن کی دنیا

فریب ماسوا کے حق نما ہونے کا وقت آیا

قیامت خیز ہے حسن چمن اے بلبل نالاں

ترے نالوں سے پھر محشر بپا ہونے کا وقت آیا

مری ٹوٹی ہوئی کشتی تھپیڑے موج طوفاں کے

خدائے پاک تیرے ناخدا ہونے کا وقت آیا

جوانی جا چکی محرومؔ ذوق آرزو کیسا

تمہارے بے نیاز مدعا ہونے کا وقت آیا

تلوک چند محروم

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(473) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Tilok Chand Mahroom, Woh Aayi Shaam Gham Waqf Bulaa Honay Ka Waqt Aaya in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Social Urdu Poetry. Also there are 33 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 5 out of 5 stars. Read the Social poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Tilok Chand Mahroom.