Kho Kar Din Ki Baton Mein

کھو کر دن کی باتوں میں

کھو کر دن کی باتوں میں

گھبراتا ہوں راتوں میں

اندیشوں کا جنگل ہے!

نفرت کی سوغاتوں میں

ساون میں آنسو، یعنی!

برساتیں، برساتوں میں

نادیدہ شیرینی ہے

سچّے رشتے ناتوں میں

خستہ حالی دیکھی ہے

مزدوروں کے ہاتھوں میں

کٹیا لے کر کتنے خواب

ڈوبی تھی برساتوں میں

یادیں گیت سناتی ہیں

تنہا، ساکت، راتوں میں

عبیدالرحمٰن نیازی

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(1429) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Ubaid Ur Rehman Niazi, Kho Kar Din Ki Baton Mein in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Social Urdu Poetry. Also there are 10 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.6 out of 5 stars. Read the Social poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Ubaid Ur Rehman Niazi.