Kisi Ke Paon Ki Ragar Se Aag Si Lagi To Thi, Kidhar Gayi

کسی کے پاؤں کی رگڑ سے آگ سی لگی تو تھی، کدھر گئی

کسی کے پاؤں کی رگڑ سے آگ سی لگی تو تھی، کدھر گئی

نظر تو آئی تھی مجھے ذرا سی دیر روشنی، کدھر گئی

میں اسکے لفظ لفظ کی بناٹوں میں گم تھا جب ہوا چلی

جو میرے دل کی میز پر کتاب تھی کھلی ہوئی، کدھر گئی

بس ایک موڑ کیا کٹا کہ واپسی کا راستہ ہی کھو گیا

میں ڈھونڈ ڈھونڈ تھک گیا یہیں تو تھی مری گلی، کدھر گئی

میں بھول آیا ہوں کہیں کہ چھین لے گیا کوئی، خبر نہیں

جو میں نے رب سے پائی تھی مرے نصیب کی خوشی، کدھر گئی

اداسیوں کے دشت نے تھکا دیا، بجھا دیا، سلا دیا

وہ میری آنکھ میں جو تھی سمندروں سی تازگی، کدھر گئی

عبیدالرحمٰن نیازی

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(773) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Ubaid Ur Rehman Niazi, Kisi Ke Paon Ki Ragar Se Aag Si Lagi To Thi, Kidhar Gayi in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Social Urdu Poetry. Also there are 10 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.9 out of 5 stars. Read the Social poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Ubaid Ur Rehman Niazi.