Nazar Nazar Mein Mulaqaat Hi Kiye Jatay

نظر نظر میں ملاقات ہی کیے جاتے

نظر نظر میں ملاقات ہی کیے جاتے

وہ لب ہلائے بنا بات ہی کیے جاتے

کئی برس کے تغافل سے قحط برپا تھا

توجّہات کی برسات ہی کیے جاتے

قریب آ ہی گئے تھے تو زخم دے جاتے

کچھ اپنی یاد مرے ساتھ ہی کیے جاتے

ہماری جوڑ لگی جھونپڑی بھی راہ میں تھی

جناب! پر سشِ حالات ہی کیے جاتے

عبید، جب کبھی میرا مکان لٹتا تھا

قلم ہمیشہ مرے ہاتھ ہی کیے جاتے

عبیدالرحمٰن نیازی

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(763) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Ubaid Ur Rehman Niazi, Nazar Nazar Mein Mulaqaat Hi Kiye Jatay in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Social Urdu Poetry. Also there are 10 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.1 out of 5 stars. Read the Social poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Ubaid Ur Rehman Niazi.