Siya Ratain Bhi Dilkash Kam Nahi Hain

سیہ راتیں بھی دلکش کم نہیں ہیں

سیہ راتیں بھی دلکش کم نہیں ہیں

یہ وہ زلفیں ہیں جن میں خم نہیں ہیں

اکٹھّے بہہ رہے ہیں دو سمندر

مگر اک دوسرے میں ضم نہیں ہیں

مرا مسکن ہے تیرے غم کی وادی

وہاں پر ہُوں جہاں پر غم نہیں ہیں

سبھی دھندلا گئے منظر پرانے

مگر کچھ صورتیں مدّھم نہیں ہیں

عبید اس عہدِ عیاری کا حصّہ

ہمارا جسم ہے، پر ہم نہیں ہیں

عبیدالرحمٰن نیازی

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(952) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Ubaid Ur Rehman Niazi, Siya Ratain Bhi Dilkash Kam Nahi Hain in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Social Urdu Poetry. Also there are 10 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.1 out of 5 stars. Read the Social poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Ubaid Ur Rehman Niazi.