Syed Aqeel Shah Poetry, Urdu Shayari of Syed Aqeel Shah

Syed Aqeel Shah Poetry, Syed Aqeel Shah Shayari
Syed Aqeel Shah Poetry - Syed Aqeel Shah is the poet of the new generation. Among the emerging Urdu Poets, Syed Aqeel Shah is getting much fame in a short time. On this page of UrduPoint, you can read all the Urdu Shayari by Syed Aqeel Shah. Read the Urdu Poetry of Syed Aqeel Shah, and you will surely like it.

سیدعقیل شاہ کی شاعری

سید عقیل شاہ ایک شاعر سرگودہا پاکستان سے تعلق ہے اردو شاعری کے چھ مجموعے منظرِ عام پہ آ چکے ہیں جن میں "چلو پھر لَوٹ جاتے ہیں" "ریزہِ خواب " "تھک گئی آنکھ سرد موسم کی" "تیرے شہر میں" "دربدر" محبت استعارہ ہے" شامل ہیں تمام مجموعے انٹرنیٹ پہ آن لائن موجود ہیں. سید عقیل شاہ سے رابطہ. 03013057203

اداس لمحوں کی سسکیوں میں ہر ایک منظر جلا ہوا ہے

Syed Aqeel Shah - سیدعقیل شاہ

udas lamho ki siskiyo me har ek manzar jala hua hai

حیران ہوں اِس بار کسی سوچ میں آ کے

Syed Aqeel Shah - سیدعقیل شاہ

Heran hon es bar kisi soch mein aa key

حیران ہوں اِس بار کسی سوچ میں آ کے

Syed Aqeel Shah - سیدعقیل شاہ

hairan ho is bar kisi soch mein aa ke

ٹھہرا ہوا اِس آنکھ کا پانی نہیں سمجھے

Syed Aqeel Shah - سیدعقیل شاہ

thehra hua is aankh ka pani nahi samjhe

خستہ کھنڈر سے مل گئے شاہوں کے خال و خد

Syed Aqeel Shah - سیدعقیل شاہ

khasta khandar se mil gaye shaho ke khaal o khad

خستہ کھنڈر سے مل گئے شاہوں کے خال و خد

Syed Aqeel Shah - سیدعقیل شاہ

khasta khandar se mil gaye shaho ke khaal o khad

Syed Aqeel Shah - سیدعقیل شاہ

Main Ghar Tha Mujhe Shahr Se Jane Ki Pari Thi

میں گھر تھا مجھے شہر سے جانے کی پڑی تھی

Syed Aqeel Shah - سیدعقیل شاہ

main ghar tha mujhe shehar se jane ki pari thi

در پر جو انتظار کی عادت نہیں ہوئی

Syed Aqeel Shah - سیدعقیل شاہ

dar par jo intezar ki aadat nahi hoi

غم کی بارش نے کبھی آنکھ کو دھویا ہی نہیں

Syed Aqeel Shah - سیدعقیل شاہ

Gham ki barish ne kbhi ankh ko dhoya hi nahin

حسیں اَداؤں سے چہرہ بگاڑتے ہوئے لوگ

Syed Aqeel Shah - سیدعقیل شاہ

haseen adaon se chehra bigadte hue log

جو اپنے زعم میں میرا گمان بولتا ہے

Syed Aqeel Shah - سیدعقیل شاہ

jo apne zaum me mera guman bolta hai

ہر اک قدم پہ دربدر وحشت کے بعد بھی

Syed Aqeel Shah - سیدعقیل شاہ

har ek qadam peh dar badar wehshat ke bad bhi

جلا کے دیب اگر یوں ہوا سے لڑنا ہے

Syed Aqeel Shah - سیدعقیل شاہ

jala ke deep agar yun hawa se larna hai

جو ہر کسی سے بڑی سادگی سے ملتا ہے

Syed Aqeel Shah - سیدعقیل شاہ

jo har kisi se bari saadgi se milta hai

گاؤں سے اس کو شہر میں لایا نہیں گیا

Syed Aqeel Shah - سیدعقیل شاہ

gaon se us ko shehar mein laya nahi gaya

زخم دینے کو تو ہر شخص دغا کرتا ہے

Syed Aqeel Shah - سیدعقیل شاہ

zakham dene ko tu har shakhs dagha karta hai

ہوا میں پھیلے پروں کے نشان چھوڑ گئے

Syed Aqeel Shah - سیدعقیل شاہ

hawa mein phely hue purzo ke nishan chor gaye

دیکھنا ہو تو عقیدے کے سوا دیکھا کر

Syed Aqeel Shah - سیدعقیل شاہ

dekhna ho tu aqeedy ke siwa dekha kar

جس کو دیکھو ہے وہی چہرے سے پتھرایا ہوا

Syed Aqeel Shah - سیدعقیل شاہ

jis ko dekho hai wohi chehre se pathraya hua

جس کی خاطر میں سرِ شوق ہوا آوارہ

Syed Aqeel Shah - سیدعقیل شاہ

jis ki khatir main sar e shoq hua awara

جب سے دیکھا ہے کہ سب لوگ بدل جاتے ہیں

Syed Aqeel Shah - سیدعقیل شاہ

jab se dekha hai k e sab log badal jate hain

ہوائے دہر کا جب بھی یہ رُخ بدلنے لگا

Syed Aqeel Shah - سیدعقیل شاہ

hawa e dehar ka jab bhi ye rukh badlega

یہ دربدر سفر کی کہانی نہیں گئی

Syed Aqeel Shah - سیدعقیل شاہ

ye dar badar safar ki kahani nahi gayi

تم تو آئے ہو پڑی دیر سے آنے والے

Syed Aqeel Shah - سیدعقیل شاہ

tum tu aaye ho bari dair se any waly

تجھے کہا تھا وفا کا صلہ نہیں ملتا

Syed Aqeel Shah - سیدعقیل شاہ

tujh kaha tha wafa ka sila nahin melta

جہاں پہ لوگ مرضی سے خدا تقسیم کرتے ہیں

Syed Aqeel Shah - سیدعقیل شاہ

jahan pe log marzi se khuda takseem karte hein

تم کو بس دُھوپ میں سائے کا گماں ہوتا ہے

Syed Aqeel Shah - سیدعقیل شاہ

tum ko bas dhop mein saye ka guma hota hai

بکھرا ہے اپنا صبر تو ہر مرحلے کے ساتھ

Syed Aqeel Shah - سیدعقیل شاہ

bekhra hai apna sabr tu har marhalay k sath

زخم تو روز نیا دے کے جہاں جاتا ہے

Syed Aqeel Shah - سیدعقیل شاہ

zakham tu roz neya de key jahan jata hai

محبتوں کے یقیں میں آ کر دغا ہوا نا وہی ہوا نا

Syed Aqeel Shah - سیدعقیل شاہ

Mohabaton k yaqeen mein aa kar dagha hova na wohi hova na

تم شوق سے مارو یہ اُٹھائے ہوئے پتھر

Syed Aqeel Shah - سیدعقیل شاہ

Tum shoq se maro ye uthaye hove pathar

Syed Aqeel Shah Poetry

Urdu poetry is very vast, and many new poets are emerging with time. UrduPoint provides an excellent opportunity for new Urdu Poetry writers to publish their poetry here so that Urdu Poetry lovers can read it. Syed Aqeel Shah is also among the emerging Urdu Poets. Syed Aqeel Shah writes impressive Urdu Shayari; you will surely love it when you read it.

Urdu Poetry by Syed Aqeel Shah is becoming very famous among Urdu poetry lovers in no time. More and more people now love to read Urdu Shayari of Syed Aqeel Shah. You can also read the complete collection of Syed Aqeel Shah Urdu Shayari here.

Read Syed Aqeel Shah Urdu Poetry, and you will like it for sure. Also, don’t forget to share your favorite Urdu Poetry of Syed Aqeel Shah with your friends.