Ghazal

غزل

تیری گلی سے آج نکلنا پڑا ہمیں

یوں حادثات پر یقیں کرنا پڑا ہمیں

ہم لاکھ کانچ کے سہی پر گردش حالات

پتھر دلوں کے ساتھ ہی رہنا پڑا ہمیں

کچھ دشمنوں کی ہم پہ مہربانیاں بھی تھیں

اپنوں سے کچھ فریب بھی کھانا پڑا ہمیں

پہلے تو انتظار میں آنکھیں چلی گئیں

پھر یوں ہوا کہ جان سے جانا پڑا ہمیں

پھر رات بھر ستارے گرے ٹوٹ ٹوٹ کر

پھر چاندنی میں رات بھر جلنا پڑا ہمیں

عامر کسی کے خواب میں کھوئے تھے ہم مگر

آنکھیں کھلیں تو لوٹ کے آنا پڑا ہمیں..

عامر خلیل

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(470) ووٹ وصول ہوئے

متعلقہ شاعری

Your Thoughts and Comments

Urdu Poetry of Aamir Khalil , Ghazal in Urdu. Also there are 5 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 5 out of 5 stars. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Aamir Khalil .