MENU Open Sub Menu

Anmol Rishta

انمول رشتہ

وہ مالک تیرا تُو بندہ اُس کا رشتہ ہے انمول

مالک جو سکھائے تجھ کو وہ بولی تُو بول

سُن مالک کی باتیں تُو اٗن پہ ہو عمل

پھر بولے اس کی بولی رہ جائے نا جھول

ہر قسم کی بولی بولیں ہر رنگ کے لوگ

پہلے سُن سب کی باتیںپھر ان کو تُو تول

وہ اپنے گھر آیا ہے دل تیرا ہے گھر

غفلت چھوڑ کے اٹھ جا بندے دل کا رستہ کھول

گر تُو چاہے پردہ ڈالے مالک تیرے عیبوں پر

فرمان ہے تیرے مالک کا ناکھول لوگوں کے پول

ارشد سب کچھ دے کے بھی راضی ہو جو رب

دنی جو ستائے بھی تو تُو بول اس کے بول

ارشد چوہدری

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(213) ووٹ وصول ہوئے

متعلقہ شاعری

Your Thoughts and Comments

Urdu Poetry of Arshad Chaudhry, Anmol Rishta in Urdu. Also there are 10 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.6 out of 5 stars. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Arshad Chaudhry.