Abr-e-Abroo Ke Niche Bichona Chahta Hoon

اَبرِ اَبرُو کے نیچے بچھونا چاہتا ہوں

اَبرِ اَبرُو کے نیچے بچھونا چاہتا ہوں

میں جی بھر کے رونا چاہتا ہوں

تھک ہار کے آیا ہوں دفتر سے

تیری یاد اور اک کونہ چاہتا ہوں

کتنا پاگل ہوں نا، سمندر ہو کے

وصل کوزے میں سمونا چاہتا ہوں

بڑی فکر ہے بچوں کے مستقبل کی

سرِ صحن غم کےبیج بونا چاہتا ہوں

گھما بیٹھا ہوں کھیل کھیل میں مَیں

نیا تیرے خیال کا کھلونہ چاہتا ہوں

یہ جو روتا رہتا ہوں تیرے ہجر میں

وفا داغ ہے ، دھونا چا ہتا ہوں

و ہ لطف ہے دردِ نارسائی میں سراجؔ

ویراں ہوں اور مزید ہونا چاہتا ہوں

آصف سراجؔ

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(218) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Poetry of Asif Siraj, Abr-e-Abroo Ke Niche Bichona Chahta Hoon in Urdu. Also there are 26 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.4 out of 5 stars. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Asif Siraj.