Ghazal

غزل

اٹھتے ہیں روز دل میں خیالات مختلف

کرتا ہے جب تو بات سے ہر بات مختلف

لطفِ وصال یار کو کیسے کروں بیاں

ملتا ہے لطف جسم کو ہر رات مختلف

آنکھیں یہ زلف و لب تیرے، قاتل ہر اک ادا

گویا کہ مارنے کے ہیں آلات مختلف

شمشیر سی زبان مقفّل ہو جائیگی

کر دوں اگر میں تجھ سے سوالات مختلف

کرتا ہے نوحہ دل یہ مرا بھی کبھی کبھی

ہوتے ہیں تیرے ہاتھ میں جب ہاتھ مختلف

تیرے مرے نصیب کی ڈوری نہ مل سکی

ہیں دونوں خاندانوں کو خطرات مختلف

رکھتا ہے شیخ جی بھی تمنّاۓ حور اویسؔ

کرتا ہے اس لیے تو عبادات مختلف

حافظ اویس

حافظ اویس

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(270) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Poetry of Hafiz Awais, Ghazal in Urdu. Also there are 20 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 5 out of 5 stars. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Hafiz Awais.