بند کریں
شاعری محمد عمران آزاد تیری تصویرکودیکھ کر
تیری تصویرکودیکھ کر
شاعر : محمد عمران آزاد
تیری تصویر کو دیکھ کر میں غزل لکھتا ہوں
رات کو دن اور دن کو رات لکھتا ہوں

کسے خبر کہ میں کیا لکھتا ہوں
اپنے دل کے جذبات لکھتا ہوں

اب بھی نہ سمجھو تو نہ سمجھو میری مجبوری
اپنے سارے میں حالات لکھتا ہوں

وہ بکھرے سپنے ٹوٹے ہوئے خواب
میں تو سارے اپنے خیالات لکھتا ہوں

چلو چھوڑو ضد اب لوٹ بھی آؤ آزاد
کہ اب میں تمہاری جیت اپنی ہار لکھتا ہوں
محمد عمران آزاد © جملہ حقوق بحق ادارہ اُردو پوائنٹ محفوظ ہیں۔
© www.UrduPoint.com

(22) ووٹ وصول ہوئے