دل بھی پریشاں ہے میری تدبیر سے

کیوں الجھ رہا ہے تو اپنی تقدیر سے

کہاں جانا ہے اب ہمیں اےدوست

سر کٹانا ہے بس تیری شمشیر سے

وہ تو بدل سکتا ہے تقدیر بھی میری

پھر کیا حاصل ہاتھ کی لکیر سے

کوئی ہم سے کرے پیار بھلا کیوں کر

بے وفا ہیں ہم تھوڑےستم گیرسے

کب سےلگارہا ہےملا فتوےفقیرپر

فقیر کا دل دکھاہے ملا کی تقریر سے

ملا بھی آجکل کے بکرے پہ آگئے

کہاوت ہے پرانی ملا کی کھیر سے

تیری شاعری میں کوئی بات ہےگمنام

ٹپکٹی ہے خراب حالی تیری تحریر سے

محمدانیق گمنام

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(244) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Poetry of M.anique Gumnam, in Urdu. Also there are 46 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.8 out of 5 stars. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of M.anique Gumnam.